KhabarBaAsar

دمشق میں اسرائیلی فضائی حملے!

Facebook
Twitter
LinkedIn
Pinterest
Pocket
WhatsApp

خبربااثر: اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری تنازعہ کے درمیان کشیدگی میں ڈرامائی طور پر اضافہ ہوا، اسرائیلی میزائل حملے نے دمشق میں ایک انتہائی سکیورٹی والے علاقے کو نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک ہو گئے۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کی طرف سے رپورٹ کی گئی اس حملے کا مقصد خاص طور پر ایک چار منزلہ عمارت پر تھا جہاں مبینہ طور پر ایران کے ساتھ منسلک رہنما ایک میٹنگ کر رہے تھے۔

برطانیہ میں مقیم مانیٹرنگ گروپ، جو شام کے اندر اپنے ذرائع کے لیے جانا جاتا ہے، نے روشنی ڈالی کہ نشانہ بنائے گئے پڑوس میں ایران کے اسلامی انقلابی گارڈ کور (IRGC) اور ایران نواز فلسطینی دھڑوں کے رہنما موجود تھے۔

آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمن نے کہا کہ "وہ یقینی طور پر ان گروپوں کے سینئر ممبران کو نشانہ بنا رہے تھے”۔

شام کے سرکاری میڈیا نے آدھی صبح ہونے والے اس حملے کی، جس کی وجہ سے دھویں کے ایک بڑے شعلے آسمان پر اٹھے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی سانا نے اطلاع دی ہے کہ یہ حملہ دمشق کے مزیہ محلے میں ہوا، جس نے اسے رہائشی عمارت پر "اسرائیلی جارحیت” قرار دیا۔ ایجنسی نے یہ واضح نہیں کیا کہ آیا جانی نقصان ہوا ہے۔

جائے وقوعہ پر موجود اے ایف پی کے ایک نمائندے نے تباہ شدہ عمارت کو گھیرے میں لے کر ہنگامی ریسپانس ٹیمیں موجود ہونے کے بعد کی صورتحال بیان کی۔ شہری دفاع کی ٹیمیں منہدم ڈھانچے کے ملبے تلے زندہ بچ جانے والوں کو تلاش کر رہی تھیں۔

مزہ کا علاقہ، جہاں یہ حملہ ہوا، نہ صرف ایک ہائی سیکیورٹی زون ہے بلکہ اس میں اقوام متحدہ کا ہیڈکوارٹر، سفارت خانے اور ریستوراں بھی ہیں۔ عینی شاہدین نے ایک زوردار دھماکے کی آواز سنی اور دھوئیں کے ایک بڑے بادل کو دیکھا، جس سے ایمبولینسوں اور فائر فائٹرز کو جائے وقوعہ پر تعینات کیا گیا۔

اسرائیل نے گزشتہ ایک دہائی کے دوران شامی سرزمین پر متعدد فضائی حملے کیے ہیں جن میں بنیادی طور پر ایران کی حمایت یافتہ افواج اور شامی فوج کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ تاہم، 7 اکتوبر کو اسرائیل اور حماس کے درمیان دشمنی شروع ہونے کے بعد سے حملوں کی تعدد میں تیزی آئی ہے۔

دسمبر میں، ایک اسرائیلی فضائی حملے میں ایران کے پاسداران انقلاب کے ایک سینئر جنرل کو ہلاک کر دیا گیا، جو جاری تنازع کی حرکیات میں ایک اہم پیشرفت ہے۔ اسرائیل نے مسلسل اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ شام کے صدر بشار الاسد کی حکومت کے اہم اتحادی ایران کو خطے میں اپنی موجودگی بڑھانے کی اجازت نہیں دے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Facebook
Twitter
LinkedIn
Pinterest
Pocket
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

Recent News

Editor's Pick