KhabarBaAsar

قطر نے اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزام میں 8 ہندوستانیوں کو سزائے موت سنا دی

Facebook
Twitter
LinkedIn
Pinterest
Pocket
WhatsApp

خبربااثر: قطر کی ایک عدالت نے جمعرات کو ہندوستانی بحریہ کے آٹھ سابق اہلکاروں کو اس وقت خلیجی ملک میں جاسوسی کے سنگین الزامات میں حراست میں لے کر سزائے موت سنائی ہے۔

دی ہندو نے رپورٹ کیا کہ اس فیصلے نے ہندوستان کی وزارت خارجہ (MEA) کے ذریعے صدمے کی لہریں بھیجی ہیں، جس نے گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور تفصیلی فیصلے کا بے صبری سے انتظار ہے۔

بھارتی بحریہ میں مختلف عہدوں پر کام کرنے والے ان اہلکاروں پر اسرائیل کے لیے جاسوسی کا الزام ہے۔ ملزمان کی شناخت بھارتی خفیہ ایجنسی را کے لیے کام کرنے کے طور پر ہوئی ہے۔ وہ مبینہ طور پر قطر میں جاسوسی کی سرگرمیاں کرتے ہوئے پکڑے گئے تھے۔

ملکی تحقیقاتی ایجنسی کے مطابق ان اہلکاروں نے اسرائیل کو قطر کے اٹلی سے جدید آبدوزیں خریدنے کے خفیہ پروگرام کی تفصیلات فراہم کیں۔

ہندوستانی MEA نے عدالت کے فیصلے کو تسلیم کرتے ہوئے ایک بیان جاری کیا: "ہمارے پاس ابتدائی معلومات ہیں کہ قطر کی عدالت نے آج الدہرہ کمپنی کے آٹھ ہندوستانی ملازمین کے معاملے میں فیصلہ سنایا ہے۔” اس نے جاری رکھا، "ہم سزائے موت کے فیصلے سے شدید صدمے میں ہیں اور تفصیلی فیصلے کا انتظار کر رہے ہیں۔ ہم اہل خانہ اور قانونی ٹیم کے ساتھ رابطے میں ہیں، اور ہم تمام قانونی آپشنز تلاش کر رہے ہیں۔”

صورتحال کی سنگینی کو اجاگر کرتے ہوئے، بیان میں اس کیس کی اہمیت اور مدد فراہم کرنے کے لیے ہندوستانی حکومت کے عزم پر زور دیا گیا۔ اس نے نوٹ کیا کہ حکام اس کیس کی قریب سے نگرانی کر رہے ہیں اور عوام کو یقین دلایا ہے کہ وہ قونصلر اور قانونی مدد فراہم کرتے رہیں گے اور یہ معاملہ قطری حکام کے ساتھ بھی اٹھائیں گے۔

MEA نے، تاہم، کارروائی کی خفیہ نوعیت کا ذکر کرتے ہوئے یہ واضح کیا کہ اس موقع پر مزید کوئی تبصرہ نہیں کیا جائے گا۔

ہندوستانی بحریہ کے آٹھ سابق افسران میں کیپٹن نوتیج سنگھ گل، کیپٹن بیرندر کمار ورما، کیپٹن سوربھ وشیشت، کمانڈر امیت ناگپال، کمانڈر پورنیندو تیواری، کمانڈر سوگناکر پاکالا، کمانڈر سنجیو گپتا، اور سیلر راگیش شامل ہیں۔ انہیں قطری انٹیلی جنس سروسز نے 30 اگست 2022 کو دوحہ سے گرفتار کیا تھا۔

ایک نجی دفاعی کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر اور قطر کے انٹرنیشنل ملٹری آپریشنز کے سربراہ کو بھی اسی کیس میں گرفتار کیا گیا تھا۔

بھارتی سیاستدانوں کی جانب سے اس معاملے کو کم کرنے کی کوششوں کے باوجود یہ واقعہ بھارت کے لیے بین الاقوامی سطح پر شرمندگی کا باعث بن گیا ہے۔ پاکستان میں کلبھوشن جادھو کے کیس اور حال ہی میں کینیڈا میں سکھ علیحدگی پسند رہنما ہردیپ سنگھ نجار کے قتل کے بعد ان آٹھ ہندوستانی بحریہ کے افسران کو قطر میں مبینہ جاسوسی کے الزام میں قید کرنے سے اہم بین الاقوامی تشویش پیدا ہوئی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Facebook
Twitter
LinkedIn
Pinterest
Pocket
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

Recent News

Editor's Pick